24

وہ صحافی جس نے خبر بنانے کے لئے واقعی بندہ قتل کروادیا

برازیلیا(مانیٹرنگ ڈیسک) خبر کی تلاش میں سرگرداں رہنا صحافی کا پیشہ ہوتا ہے لیکن برازیل کے ایک صحافی نے خبر بنانے کے لیے ایسا کام کر ڈالا کہ سن کر ہی آدمی کے رونگٹے کھڑے ہو جائیں۔ میل آن لائن کے مطابق برازیل کا یہ صحافی 58سالہ ویلیس سوزا تھا جو ملک کے معروف ترین کرائم شو ’کینل لیور‘ (Canal Livre)کا میزبان تھا۔ اس نے ایک بار کرائے کے قاتلوں کو پیسے دیئے اور انہیں ایک آدمی کو گولی مارنے کو کہا تاکہ ادھر قتل ہو اور ادھر وہ اپنا کیمرہ مین لے کر جائے وقوعہ پر پہنچ جائے اور سب سے پہلے لائیو کوریج کرے تاکہ اس کے شو کو ریٹنگ مل سکے۔

رپورٹ کے مطابق سٹوڈیو میں بیٹھ کر ویلیس لوگوں کو جرائم کے خلاف بھاشن دیتا تھا لیکن حقیقت میں خود جرائم کرواتا اور پھر ان کی کوریج کرکے اپنے شو کی ریٹنگ بڑھاتا۔ ویلیس اکثر جائے وقوعہ پر پولیس سے بھی پہلے پہنچ جاتا تھا، جس کی وجہ سے برازیل میں اس کے شو کی دھوم تھی۔ ویلیس اس سے قبل پولیس میں ملازمت کرتا تھا اور پھر صحافت میں آگیا جہاں سے اس نے شہرت حاصل کی اور پھر سینیٹر منتخب ہو کر ایوان اقتدار میں پہنچ گیا۔ اس کے متعلق بتایا جاتا ہے کہ وہ منشیات کی سمگلنگ کا ایک نیٹ ورک بھی چلاتا تھا اوراس نے کرائے کے قاتلوں کے ذریعے اپنے متعدد مخالفین کو بھی قتل کروایا

واضح رہے کہ 2009ءمیں ویلیس کا ایک باڈی گارڈ گرفتار ہوا تھا جس نے دوران تفتیش ویلیس کے خلاف یہ ہوشربا انکشافات کیے تھے۔اس باڈی گارڈ کے انکشافات کے بعد 15منشیات سمگلر گرفتار کیے گئے جن میں ویلیس کا بیٹا بھی شامل تھا۔ دوسری طرف ویلیس کو سینیٹر کے عہدے سے بھی ہٹا دیا گیا اور اس کی پارٹی پارٹیڈو پاپولر پارٹی نے بھی اسے نکال دیا۔اس کے کچھ مہینوں بعد ہی ویلیس کی ہارٹ اٹیک کے باعث موت واقع ہو گئی۔ اب ویلیس سوزا کے ان جرائم اور زندگی کی کہانی پر ایک ڈاکومنٹری بنائی گئی ہے جو نیٹ فلیکس پر نشر کی جائے گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں