10

برطانیہ کے نئے وزیر اعظم کیلئے پہلے مرحلے کی ووٹنگ ، پاکستانی نژاد ساجد جاوید نے اتنے ووٹ حاصل کرلیے کہ آپ کو بھی یقین نہ آئے

لندن (نمائندہ خصوصی) تھریسامے کے استعفیٰ کے اعلان کے بعد برطانیہ کے نئے وزیر اعظم کی دوڑ کا پہلا مرحلہ مکمل ہوگیا ہے جس میں سابق وزیر خارجہ بورس جانسن 114 ووٹ لے کر سر فہرست رہے جبکہ پاکستانی نژاد وزیر داخلہ ساجد جاوید نے 23 ووٹ حاصل کرکے پانچویں پوزیشن حاصل کی۔

برطانیہ کی حکمران جماعت کنزرویٹو پارٹی کے سربراہ اور ملک کے نئے وزیر اعظم کے انتخاب کیلئے جمعرات کو ہونے والی ووٹنگ میں سابق وزیر خارجہ بورس جانسن سب سے مضبوط امیدوار بن کر سامنے آئے ، انہوں نے وزارت عظمیٰ کیلئے ہونے والے پہلے بیلٹ میں 114 ووٹ حاصل کیے ہیں۔ پہلے مرحلے میں 10 میں سے وہ تین امیدوار ناک آﺅٹ ہوگئے جنہوں نے 17 سے کم ووٹ حاصل کیے ہیں ، ان میں اینڈریا لیڈسم، مارک ہارپر اور ایستھر میک وے شامل ہیں۔

برطانیہ کے موجودہ وزیر خارجہ جیریمی ہنٹ نے حکمران جماعت کی سربراہی اور وزارت عظمیٰ کی کرسی کیلئے ہونے والی ووٹنگ میں 43 ووٹ حاصل کیے اور وہ دوسرے نمبر پر رہے۔ برطانیہ کے وزیر داخلہ پاکستانی نژاد ساجد جاوید نے 23 ووٹ حاصل کرکے پانچویں پوزیشن حاصل کی۔

کنزر ویٹو پارٹی کی سربراہی اور وزارت عظمیٰ کی کرسی کیلئے پارٹی کے ارکان اسمبلی ووٹ کرتے ہیں ، پہلا مرحلہ مکمل ہونے کے بعد اب یہ ارکان دوسرے مرحلے کیلئے ووٹنگ کریں گے اور جو امیدوار 33 سے کم ووٹ حاصل کریں گے وہ ناک آﺅٹ ہوجائیں گے۔ یہ مرحلہ اس وقت تک جاری رہے گا جب تک صرف 2 امیدوار مقابلے میں نہیں بچ جاتے، اس مقصد کیلئے ووٹنگ 18، 19 اور 20 جون کو ہوگی۔ وزیر اعظم کے انتخاب کیلئے حتمی مرحلے میں ووٹنگ 22 جون کو ہوگی جس کے نتائج کا اعلان 4 ہفتے بعد کیا جائے گا اور 30 جولائی کو نیا وزیر اعظم اپنے عہدے کا حلف اٹھائے گا

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں