13

گوگل نے 10 سال بعد ’اینڈرائڈ‘ کا ’میٹھا‘ ختم کرنے کا فیصلہ کر لیا مگر کیوں؟ دلچسپ تفصیلات سامنے آ گئیں

نیویارک (نمائندہ خصوصی) دنیا کے سب سے معروف سرچ انجن ’گوگل‘ نے 10 سال بعد اپنے سمارٹ فون آپریٹنگ سسٹم اینڈرائڈ سے ’میٹھا‘ ختم کر دیا ہے، یعنی اس کا نام میٹھی چیزوں سے منسوب کرنے کی روایت ختم کر دی ہے اور اس کے اگلے ورژن ”اینڈرائڈ کیو “ کو ”اینڈرائڈ 10‘ ‘کے نام سے متعارف کرانے کا اعلان کر دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق گوگل نے آغاز سے ہی اس آپریٹنگ سسٹم کے مختلف ورژن کے نام میٹھی اشیاءپر رکھے تھے جس کا آغاز اینڈرائڈ کپ کیک سے ہوا اور پھر ڈونٹ، ایکلیئر، فرویو، جنجر بریڈ، ہنی کومب، آئس کریم سینڈویچ، جیلی بینز، کٹ کیٹ، لالی پاپ، مارش میلو، نوگٹ، اوریو سے ہوتا ہوا ’پائی‘ تک پہنچا اور اب اینڈرائڈ کے دسویں ورژن یعنی ’کیو‘ کی لانچنگ کی تیاری کی جا رہی ہے۔

گوگل نے اپنے آفیشل بلاگ کے ذریعے یہ اعلان کیا ہے کہ حرف ”کیو“ سے میٹھی اشیاءبہت زیادہ عام نہیں بلکہ بیشتر افراد کو تو ہوسکتا ہے کہ ان چیزوں کا علم ہی نہ جبکہ برسوں سے لوگوں کی جانب سے یہ فیڈ بیک بھی مل رہا تھا کہ آپریٹنگ سسٹم کے نام عالمی برادری میں ہر ایک کیلئے سمجھنا مشکل ہوتا ہے لہٰذا اس پالیسی کو تبدیل کیا جائے جس پر عمل کرتے ہوئے اب اینڈرائڈ کے ”کیو“ ورژن کو ’اینڈرائڈ 10‘ کا نام دیا جائے گا۔

اعلان کے مطابق نئے نام کے ساتھ اینڈرائیڈ کا اپ ڈیٹ لوگو بھی کمپنی کی جانب سے متعارف کرایا گیا ہے جو کہ کمپنی نے زیادہ ماڈرن قرار دیا ہے جبکہ اس کے علاوہ کئی دلچسپ اور جدید فیچرز بھی شامل کئے جا رہے ہیں جن کے باعث یہ آپریٹنگ سسٹم مزید دلچسپ اور کارآمد ہو جائے گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں