5

اثاثہ جات کیس، خورشیدشاہ کے اہلخانہ اور فرنٹ مین کی عبوری ضمانت میں 15 نومبر تک توسیع،تحقیقات میں تعاون کا حکم

کرچی (نمائندہ خصوصی)سندھ ہائیکورٹ نے اثاثہ جات کیس میں خورشیدشاہ کے اہلخانہ اورفرنٹ مین کی عبوری ضمانت میں 15 نومبر تک توسیع کردی، عدالت نے خورشید شاہ کی بیویوں کوعارضی طورپرحاضری سے استثنیٰ دےدیااور تحقیقات میں نیب سے تعاون کرنے کا حکم دیدیا۔

تفصیلات کے مطابق سندھ ہائی کورٹ میں پیپلزپارٹی رہنما خورشید شاہ کے خلاف کیس کی سماعت ہوئی،نیب نے سندھ ہائی کورٹ پیش رفت رپورٹ پیش کردی، نیب نے کہا ہے کہ مرکزی ملزم خورشید شاہ جسمانی ریمانڈ پر ہیں تحقیقات جاری ہیں،خورشید شاہ کے بینک اکاو¿نٹس اور اہم شواہد حاصل کرلیے ہیں، نیب نے مزید کہا کہ ملزمان میں خورشید شاہ کی اہلیہ بی بی گلناز اور بی بی طلعت شامل ہیں،اس کے علاوہ خورشید شاہ کے بیٹے زیرق شاہ، سید فرخ شاہ، پہلاج، اعجاز بلوچ اور اجیت کمار شامل بھی شامل ہیں،نیب نے کہا کہ فرنٹ مین قاسم علی شاہ، آفتاب سومرو سمیت دیگر ملزمان نیب کو مطلوب ہیں۔

عدالت نے اثاثہ جات کیس میں خورشیدشاہ کے اہلخانہ اورفرنٹ مین کی عبوری ضمانت میں 15 نومبر تک توسیع کردی،عدالت نے خورشید شاہ کی بیویوں کوعارضی طورپرحاضری سے استثنیٰ دےدیااور تحقیقات میں نیب سے تعاون کرنے کا حکم دیدیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں