6

محبت میں ناکامی انسان کی زندگی کو کامیاب بنانے میں کیا کردار ادا کرسکتی ہے؟ 5 حقائق آپ بھی جانئے

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) اہل دانش کہتے ہیں کہ ناکامی درحقیقت کامیابی کے سفر میں ایک پڑاﺅ کی حیثیت رکھتی ہے ۔ اگر انسان اس پڑاﺅ سے کچھ سیکھے تو منزل کا حصول آسان ہو جاتاہے۔ کیا یہی اصول محبت میں ناکامی پر بھی لاگو ہو سکتا ہے؟

ٹائمز آف انڈیا میں شائع ہونے والے ایک آرٹیکل میں تو مصنفہ نے ایسا ہی کہا ہے۔ اس نے محبت کے رشتے کی 5ایسی سچائیاں بتائی ہیں کہ جو کسی کو معلوم ہوں تو بھی وہ انہیں ماننے کو تیار نہیں ہوتا۔ مصنفہ لکھتی ہے کہ محبت میں ناکامی ہمیشہ تکلیف دہ عمل ہی نہیں ہوتا بلکہ اس سے بہت کچھ سیکھا جا سکتا ہے اور میں نے خود محبت میں ناکامی پر بہت کچھ سیکھا ہے۔

میں نے سیکھا ہے کہ دنیا میں کوئی مسٹررائٹ اور مس رائٹ نہیں ہوتے۔ جب آپ کسی کے ساتھ تعلق میں ہوتے ہو تو آپ کو اس کی خامیوں کو نظرانداز کرنا ہی پڑتا ہے۔ جو لوگ اپنے پارٹنر میں مسٹر رائٹ یا مس رائٹ تلاش کرتے ہیں ان کا تعلق زیادہ دیر تک نہیں چل سکتا۔میں اپنے بوائے فرینڈ کے ساتھ اتنی محبت کرتی تھی کہ مجھے اس کی خامیاں کبھی نظر ہی نہیں آئیں۔ مگر جب ہمارا بریک اپ ہوا تو اس کی خامیاں میرے سامنے آئیں۔ تب میں نے یہ سیکھا کہ ٹھیک ہے ہمیں اپنے پارٹنر کی خامیاں نظر انداز کرنی چاہئیں مگر اس کی خطرناک اور زہریلی عادتیں نظر انداز کرکے اسے پرفیکٹ نہیں سمجھنا چاہیے۔

خاتون لکھتی ہے کہ اپنا تعلق ٹوٹنے پر میں نے یہ بھی سیکھا کہ اگر آپ کا تعلق ٹھیک سے نہ چل رہا ہو تو اسے توڑ دینے میں ہچکچانا نہیں چاہیے۔ آپ ایسے تعلق کو جتنا طویل کرتے جائیں گے اتنا ہی آپ کے لیے اذیت ناک ہو گا۔ یہ قبول کر لینا کہ آپ کا تعلق اب نہیں چل سکتا، میرے تجربے کا سب سے بڑا سبق ہے جو مجھے حاصل ہوا۔ اس کے بعد میں نے یہ بھی سیکھا کہ پارٹنر کے ساتھ ہم آہنگی (Compatibility) رشتہ خوشگوار ہونے کی ضمانت نہیں ہو سکتی۔ میری اور میرے بوائے فرینڈ کی عادتیں تو بالکل ایک جیسی تھیں جس پر میں بہت خوش تھی تاہم ہمارے شخصی خواص ایک دوسرے سے بالکل مختلف تھے۔ اسے بات بات پر غصہ آتا تھا اور مجھے شاید ہی کبھی غصہ آتا ہو۔ چنانچہ موافقت کو آپ خوشی کی علامت قرار نہیں دے سکتے۔

اس تعلق کے دوران میں نے یہ بھی سیکھا کہ آپ کسی ایک شخص کے ساتھ تعلق میں ہوں تو اس دوران آپ کسی اور شخص کی طرف بھی متوجہ ہو سکتے ہیں۔ اس پر دوسرے پارٹنر کو یہ نہیں سمجھ لینا چاہیے کہ اس کا ساتھی بے وفائی کر رہا ہے۔ میرے تعلق کے دوران میرے بوائے فرینڈ نے اپنی ایک ساتھی ورکر کی بہت تعریفیں شروع کر دی تھیں اور ہماری اس پر بہت لڑائی بھی ہوتی تھی۔ بہت دیر میں جا کر مجھے احساس ہوا کہ کسی سے تعلق کے دوران بھی کوئی دوسرا اچھا لگ سکتا ہے اور یہ بے وفائی نہیں ہوتی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں