6

دورہ آسٹریلیا کیلئے قومی ٹیسٹ اور ٹی 20 سکواڈز کا اعلان آج ہو گا، کس کس کھلاڑی کی شمولیت کا امکان ہے؟

لاہور (نمائندہ خصوصی) دورہ آسٹریلیا کیلئے قومی ٹی 20 اور ٹیسٹ سکواڈز کا اعلان آج کیا جائے گا، ٹی 20 ٹیم میں سرفراز کی جگہ محمد رضوان وکٹ کیپر بلے باز کے طورپر شامل ہوں جبکہ فخر زمان کی فارم باعث تشویش ہے البتہ انجری کے باعث سری لنکا کیخلاف سیریز نہ کھیل پانے والے امام الحق کی واپسی کا قوی امکان ہے۔

ڈومیسٹک ٹورنامنٹ میں عمدہ کارکردگی نے آصف علی کی قومی ٹیم میں شمولیت کی راہ بھی ہموار کر دی ہے جبکہ بیٹنگ لائن میں ایک دو نئے چہرے بھی آزمائے جانے کا امکان ہے، فاسٹ باﺅلر محمد عامر، وہاب ریاض، محمد حسنین اور شاہین آفریدی کومزید آرام دینے کا فیصلہ کیا گیا توعثمان خان شنواری سکواڈ کا حصہ ہوں گے جبکہ محمد عباس کی فٹنس بھی بحال ہو چکی ہے اور وہ ٹیسٹ ٹیم میں سلیکشن کیلئے دستیاب ہیں۔

سینئرزکی عدم موجودگی میں راحت علی، شاہین شاہ آفریدی، ثمین گل، عمران خان سینئر، محمد موسیٰ اور نسیم شاہ میں سے فاسٹ باﺅلرز کا انتخاب کیا جائے گا جبکہ شاداب خان کے متبادل کو متعارف کرانے کیلئے 3 سپنرز کے ناموں پر غور کیا جارہا ہے، دورئہ جنوبی افریقہ میں ٹیسٹ سکواڈ کا حصہ بننے والے فخرزمان کو عابد علی کیلئے جگہ خالی کرنا پڑے گی۔

سریی لنکا کیخلاف سیریز میں ناقص کارکردگی اور شائقین کے شدید رد عمل کی وجہ سے احمد شہزاد اور عمراکمل کی رخصتی کا امکان ہے جبکہ قومی ٹی 20 ٹورنامنٹ میں فخرزمان کا بیٹ نہیں چل سکا، اوپنر نے 17.75کی اوسط سے 71رنز بنائے، اگر انہیں آرام دینے کا فیصلہ ہوا تو آسٹریلوی کنڈیشنز کو دیکھتے ہوئے امام الحق کو موقع دیا جاسکتا ہے، انہیں زخمی ہونے کی وجہ سے سری لنکا کیخلاف سیریز کیلئے زیر غور نہیں لایا گیا تھا، ماضی میں آزمائے اور ڈراپ کئے جانے والے اویس ضیاءنے قومی ٹی 20 ٹورنامنٹ میں 46.50کی اوسط سے 186رنز بنائے اور فہرست میں دوسرے نمبر پر ہیں جبکہ عمرامین نے 40.75کی اوسط سے 163رنز بنائے ہیں، ان دونوں کے نام پر بھی غور کیا جاسکتا ہے۔

فیصل آباد میں جاری ایونٹ کے تیسرے کامیاب ترین بیٹسمین آصف علی نے 60.66کی اوسط سے 182رنز جوڑے اور ان کی ٹیم میں پوزیشن کو کوئی خطرہ نظر نہیں آ رہا، حارث سہیل 12.66کی ایوریج سے 38اور افتخار احمد 17.51کی اوسط سے 51رنز ہی بناپائے ہیں۔ان کی موجودہ فارم سلیکٹرز کو متبادل کے بارے میں سوچنے پر مجبور کرے گی تاہم تجربے کی بنیاد پر انہیں ٹیم کا حصہ بنایا جا سکتا ہے۔

باﺅلرز میں محمد حسنین اچھی فارم میں ہیں اور 15کی اوسط سے 9وکٹوں کیساتھ سرفہرست ہیں، ان کی رفتار آسٹریلیا کی کنڈیشنز میں مفید ثابت ہوگی، تجربہ کار محمد عامر اور وہاب ریاض بھی موجود ہوں گے، اگر ٹیسٹ سیریز سے قبل شاہین آفریدی کو مزید آرام دینے کا فیصلہ کیا گیا تو چوتھا نام عثمان شنواری کا ہوسکتا ہے، آل راﺅنڈرز میں عماد وسیم کی شمولیت یقینی ہے جبکہ ناقص کارکردگی کے باعث ٹیم سے باہر ہونے والے فہیم اشرف قومی ٹی 20 کپ میں اچھی باﺅلنگ کرتے ہوئے 13.62کی اوسط سے 8 وکٹیں حاصل کر چکے ہیں اور تیسرے کامیاب ترین باﺅلر بھی ہیں جس کے باعث ان کے نام پر غور کیا جا سکتا ہے، عماد بٹ نے 8 وکٹیں حاصل کیں اور ایک دو اچھی اننگز بھی کھیلی ہیں، ان کا نام بھی زیر غور ہو گا۔

عامر یامین بھی ممکنہ کھلاڑیوں کی فہرست میں شامل ہیں، محمد نواز اور سری لنکا کیخلاف سیریز کے بعد ڈومیسٹک ایونٹ میں بھی ردھم میں واپس نہ آنے والے شاداب خان کو بھی ایک موقع اور دیا جاسکتا ہے۔دورہ جنوبی افریقہ کیلئے ٹیسٹ سکواڈ میں شامل فخرزمان کی جگہ عابد علی کی شمولیت یقینی ہے، امام الحق، بابر اعظم اور اسد شفیق بھی موجود ہوں گے،شان مسعود اور سمیع اسلم کے نام بھی زیرغور ہیں، عثمان صلاح الدین اور محمد سعد کو بھی موقع دیے جانے کا امکان ہے، کپتان اظہر علی کو وکٹ کیپر بیٹسمین کے طور پر محمد رضوان کی خدمات حاصل ہوں گی، دورے کیلیے بولرز کا انتخاب مشکل مہم ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں