38

خبر شامل کرتے ہیں گجرات سے نمائندہ پاورپلس نیوز جمیل احمد طاہر کی گجرات کے علاقے جلالپورجٹاں میں پولیس تشدد کا انوکھا واقعہ کالی وردی میں گھسے گلو بٹ نے گورنمنٹ سکول کے ٹیچر کو وحشیانہ تشدد کا نشانہ بنادیا۔

خبر شامل کرتے ہیں گجرات سے نمائندہ پاورپلس نیوز جمیل احمد طاہر کی
گجرات کے علاقے جلالپورجٹاں میں پولیس تشدد کا انوکھا واقعہ کالی وردی میں گھسے گلو بٹ نے گورنمنٹ سکول کے ٹیچر کو وحشیانہ تشدد کا نشانہ بنادیا۔ تمام سکولوں کے ٹیچرز پنجاب ٹیچرز یونین اور طلباءپولیس کےخلاف سراپا احتجاج بن گئے ۔ تعلیمی سرگرمیاں بند ۔اے ایس آئی کو نوکری سے فارغ نہ کیا گیا تو تاریخ ساز احتجاج کریں گے۔ پنجاب ٹیچرز یونین کا اعلان۔ ڈی ایس پی صدر سرکل موقع پر پہنچ گئے۔ انصاف کی یقین دہانی۔
واقعہ گورنمنٹ اسلامی ہائی سکول نمبر2 میں اس وقت پیش آیا جب تھانہ سٹی جلالپورجٹاں کے اے ایس آئی آصف اور سکول ٹیچر عبدالرحمن کے درمیان موٹر سائیکل کی پارکنگ پرمعمولی بحث ہوئی جس پر اے ایس آئی آصف اشتعال میں آگیا ۔ جس نے ٹیچر کوگالیاں دیں اور موقع سے چلا گیا۔ تھوڑی دیر بعد تھانہ سٹی کی گاڑی میں اپنے مسلح ساتھیوں کے ہمراہ اے ایس آئی دوبارہ سکول آیا اور اندر گھس کر آہنی راڈ سے ٹیچر عبدالرحمن پر وحشیانہ تشدد شروع کردیا۔ جسے سکول مذکورہ ٹیچر غلام محی الدین آگے بڑھے تو اے ایس آئی آصف نے ان پر بھی تشدد کرتے ہوئے کپڑے پھاڑ دئےے اور سنگین نتائج کی دھمکیاں دیتا ہوا ۔ سکول سے فرار ہوگیا واقعہ کی اطلاع ملتے ہی جلالپورجٹاں کے تمام سکولوں کے اساتذہ پنجاب ٹیچرز یونین کے صدر چوہدری سرفراز ضلعی صدر چوہدری ساجد نت اور ہزاروں طلباءگورنمنٹ اسلامیہ ہائی سکول نمبر 2 پہنچ گئے۔ جنہوں نے پولیس کےخلاف زبردست نعرے بازی کردی۔ بعد ازاں ڈی ایس پی صدر سرکل حافظ سعید احمد ، ایس ایچ او سٹی عدنان تارڑ بھاری نفری کے ہمراہ موقع پر پہنچ گئے۔ جہاں انہوں نے اساتذہ کو یقین دلایا کہ واقعہ میں ملوث پولیس ملازمین کےخلاف سخت سے سخت کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔ اس موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ڈی ایس پی کا کہنا تھا کہ اساتذہ ہمارے لئے قابل احترام ہیں جن پر ایسے واقعات کسی بھی صورت برداشت نہ کئے جائیں گے۔ ملزم چاہے کوئی بھی ہو۔ انشاءاللہ انصاف کے تقاضے پورے کرتے ہوئے کیفر کردار تک پہنچائیں گے۔ جبکہ پنجاب ٹیچرز یونین کے صدر چوہدری ساجد نت کا کہنا تھا کہ اے ایس آئی آصف نے جس طرح غنڈہ گردی کرتے ہوئے گلو بٹ ہونے کا مظاہرہ کیا۔ اگر اس کے خلاف سخت سے سخت کارروائی نہ کی گئی تو احتجاج کا دائرہ اتنا وسیع کردیا جائے گا جسے سنبھالنا ضلعی انتظامیہ کے بس میں نہ رہے گا۔ انہوں نے کہا کہ اے ایس آئی کو فوری طور پر نوکری سے فارغ کیا جائے جب تک ہمارے مطالبات پورے نہیں ہوتے تب تک تعلیمی سرگرمیاں بند رکھیں گے اور یہ سلسلہ پورے پنجاب میں بھی پھیل سکتا ہے۔پنجاب ٹیچرز یونین کی طرف سے اے ایس آئی آصف کے خلاف ڈی ایس پی حافظ سعید کو تحریری درخواست دیدی گئی ہے جبکہ ڈی پی او گجرات سید توصیف حیدر نے واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے ڈی ایس پی کو فوری رپورٹ کرنے کی ہدایت کی۔
۔۔۔۔۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں